121

سام سنگ ان دنوں کس طرح کے اسمارٹ فون پر کام کر رہی ہے ، اور مارکیٹ میں آنے کے بعد یہ موبائل فون ٹیکنالوجی کی دنیا میں کیا انقلاب برپا کرنے والا ہے ؟ تازہ ترین خبر

لندن (ویب ڈیسک) اسمارٹ موبائل فون بنانے والی جنوبی کورین کمپنی ’سام سنگ‘ نے رواں برس فروری میں ایس سیریز کے تین فونز استعمال کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا یہ فون کمپنی کے اب تک کے سب سے بہترین فونز ہیں۔کمپنی کا کہنا تھا کہ چوں کہ یہ تینوں فونز کمپنی کے 10 سال مکمل ہونے کے موقع پر

ریلیز کیے گئے، اس لیے انہیں سب سے منفرد کرکے پیش کیا گیا۔ اور اب تک سام سنگ گلیکسی 10، گلیکسی 10 پلس اور گلیکسی 10 اے کو ہی کمپنی کےسب سے بہترین فون سمجھا جاتا ہے۔ لیکن اب اطلاعات سامنے آئی ہیں کہ حال ہی میں جنوبی کورین کمپنی نے ایک نئے فون بنانے کے لیے حقوق دینے والی کمپنی میں ایک درخواست دائر کی ہے جس میں فون کے ماڈل کا نام بتائے بغیر حقوق حاصل کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔ سام سنگ کی جانب سے حقوق حاصل کرنے کے لیے دی جانے والی درخواست امریکی اقتصادی جریدے ’فوربز‘ کے مطابق کمپنی کی جانب سے حقوق کے لیے دی جانے والی درخواست اور اب تک لیک ہونے والی سام سنگ کے فون کی پہلی تصویر سے لگتا ہے کہ یہ فون ’بارڈر لیس‘ ہوگا.یعنی فون میں کوئی بارڈر نہ ہونے کی وجہ سے اس کی اسکرین فل ڈسپلے ہوگی۔اب تک سامنے آنے والی معلومات اور تصاویر کے مطابق کمپنی اس فون کو ’گلیکسی ایس 11‘ کا نام دے سکتی ہے۔رپورٹس ہیں کہ اس فون میں کمپنی پہلی بار 64 میگا پکسل کا فرنٹ کیمرا دے گی جب کہ اس میں ایک سے زائد کیمرے دیے جانے کا بھی امکان ہے۔ممکنہ طور پر اس فون کو گلیسکی 11 کا نام دیا جائے گا۔ اس فون کو نیکسٹ جنریشن ٹیکنالوجی کے تحت تیار کیا جا رہا ہے جو فائیو جی اور ممکنہ طور پر سکس جی ٹیکنالوجی سے لیس ہوگی۔سام سنگ الیون میں بھی فنگر پرنٹ سینسر فیچر دیا جائے گا، تاہم ساتھ ہی خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ بارڈر لیس ہونے کی وجہ سے اس فون میں اہم فیچرز نہیں ہوں گے۔بارڈر لیس ہونے کی وجہ سے اس فون کے کونے اور باڈی دیگر فونز کے مقابلے باریک بنائے جانے کا امکان ہے اور چوں کہ بارڈر لیس شیپ میں اسکرین فون کے بیک سائیڈ سے بلکل ملی ہوئی ہوگی، اس لیے اس فون میں ’ہیڈ فون‘ جیک نہ دیے جانے کی چہ مگوئیاں بھی کی جا رہی ہیں۔ممکن ہے کہ اس فون میں وائرلیس ہیڈ فون فیچر دیا جائے، ساتھ ہی کہا جا رہا ہے کہ ممکنہ طور پر یہ فون وائرلیس چارچر فیچر کے ساتھ ہوگا، تاہم اس حوالے سے تصدیق نہیں ہوسکی۔خیال کیا جا رہا ہے کہ آئندہ کچھ ہفتوں میں اس فون کی مزید تفصیلات سامنے آئیں گی اور ممکنہ طور پر کمپنی اس فون کو آئندہ سال کے آغاز میں متعارف کرائے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں