18

بریکنگ نیوز:وقار یونس پاکستان کرکٹ ٹیم کی کوچنگ کی دوڑ میں شامل،اہم ٖفیصلہ کر لیا گیا

لاہور(ویب ڈیسک)سابق کپتان وقار یونس پاکستان کرکٹ ٹیم کی کوچنگ کی دوڑ میں شامل ہوگئے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وقار یونس نے اس بار ہیڈ کوچ نہیں بلکہ بولنگ کوچ کے عہدے کیلئے درخواست دی دہے۔ذرائع کے مطابق قومی ٹیم کے بولنگ کوچ کیلئے درخواست دینے والے وقار یونس اب تک کے ہائی پروفائل کوچ ہیں۔ خیال رہے کہ وقار یونس دو مرتبہ

پاکستان ٹیم کے ہیڈ کوچ رہ چکے ہیں، وقار یونس آخری مرتبہ مئی 2104 سے اپریل 2016 تک ہیڈ کوچ رہے۔اس کے علاوہ وقار یونس دو مرتبہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے بولنگ کوچ کے عہدے پر بھی فائز رہ چکے ہیں۔یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے کوچنگ اسٹاف کیلئے درخواستیں طلب کی ہوئی ہیں،درخواستیں جمع کرانے کی آخری تاریخ 26 اگست ہے۔ورلڈکپ 2019 میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے پورے کوچنگ اسٹاف اور سلیکشن کمیٹی کو فارغ کردیا ہے۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پی سی بی نے مالیاتی رپورٹ 2019 جاری کر دی جس کے تحت چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے سابقہ چئیرمینز کے مقابلے میں کم اخراجات کیے جبکہ بورڈ کے لیے سابق چئیرمین پی سی بی نجم سیٹھی موجودہ سربراہ احسان مانی اور سابق چیئرمین شہریار خان سے زیادہ مہنگے ثابت ہوئے۔ایک سال کے دوران چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے ایک کروڑ 3 لاکھ 59 ہزار 76 روپے خرچ کیے اور نجم سیٹھی کے دور میں خرچ کی گئی رقم کے مقابلے میں یہ اعدادوشمار تین گنا کم ہیں۔سابق چیئرمین نجم سیٹھی نے 18-2017 کے مالی سال کے دوران 3 کروڑ 95

لاکھ 2 ہزار 342 روپے خرچ کیے جبکہ ان سے قبل سابق سربراہ شہریار خان کے دور میں مالی سال 17-2016 میں 1 کروڑ 96 لاکھ 92 ہزار 788 روپے کے اخراجات کیے گئے۔اس طرح نجم سیٹھی نے موجودہ سربراہ کے مقابلے میں تقریباً 2 کروڑ 90لاکھ روپے سے زائد اضافی خرچ کیے جبکہ شہریار خان کے دور میں بھی موجودہ سربراہ کے دور کے مقابلے میں کم و بیش 90لاکھ روپے کی اضافی رقم خرچ کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں