80

پی ٹی آئی رہنما علیم خان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

اسلام آباد (نیوزڈیسک) : پی ٹی وی پارلیمنٹ حملہ کیس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پی ٹی وی پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت ہوئی۔کیس کی سماعت انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج راجہ جواد عباس نے کی۔عدالت نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کی ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری

جاری کر دئیے ہیں۔ عدالت نے مسلسل عدم حاضری پر علیم خان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے۔عدالت نے علیم خان کو 30 ستمبر کو طب کیا ہے۔میڈیا رپورٹس میں مزید بتایا گیا ہے کہ عدالت نے پولیس کو ملزم علیم خان کو 30ستمبر کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔واضح رہے رواں سال مذکورہ کیس میں عدالت نے ےوزیر اطلاعات خیبر پختونخواہ شوکت یوسفزئی کے ناقابل ضمانت وارنڑ گرفتاری جاری کرتے ہوئے ان کی گرفتاری کا حکم دیا تھا۔ شوکت یوسفزئی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری بھی مسلسل عدم حاضری پر جاری کیے گئے تھے۔جس پر عدالت نے شوکت یوسفزئی کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔خیال رہے اس سے قبل انسداددہشتگردی کیعدالت کے جج راجہ جوادعباس حسن کی عدالت نے و زیراعظم عمران خان وغیرہ کیخلاف پی ٹی وی پارلیمنٹ حملہ کیس میں8شریک ملزمان کے استثنیٰ کی درخواست منظور کرتے ہوئے سماعت ملتوی کی تھی۔ سماعت کے دوران وکیل علی بخاری نے کیس کے شریک ملزمان شاہ محمود قریشی،پرویزخٹک، جہانگیر ترین،اسدعمر،مسعودعالم،سیف اللہ، راجہ خرم نوازاورشفقت

محمودکی طرف سے استثنیٰ کی درخواستیں جمع کرائیں جس پرعدالت نے ا یک روزہ استثنیٰ منظورکرتے ہوئے سماعت10ستمبر تک کیلئے ملتوی کی تھی۔آج پی ٹی وی پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت ہوئی تو عدالت نے پی ٹی آئی رہنما علیم خان کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں