51

آصف زرداری کی طبیعت ناساز۔۔۔۔اعلیٰ ترین شخصیت اچانک سابق صدر کو ملنے ہہنچ گئی،لیکن اس ملاقات کے پیچھے چھپی کہانی بھی سامنے آ گئی

کراچی(ویب ڈیسک ) سابق صدر آصف علی زرداری اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے درمیان ملاقات ہوئی ہے جس میں آئی جی سندھ سمیت دیگر معاملات پر بات چیت ہوئی ۔ مراد علی شاہ آصف علی زرداری سے ملاقات کے لیے نجی ہسپتال پہنچے جہاں انہوں نے وزیراعظم سے ہونے والی ملاقات اور ٹیلی فونک

بات چیت کے متعلق آصف علی زرداری سے تبادلہ خیال کیا اور انہیں آئی جی سندھ کے معاملے پروفاقی حکومت کی رائے سے آگاہ کیا ۔سابق صدر نے وزیراعلیٰ سندھ کو جاری ترقیاتی کام مزید تیز کرنے کی ہدایت کی۔اس سے قبل وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ مکے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا۔ وزیراعظم نے وفاقی کابینہ میں آئی جی سے متعلق مشاورت سے آگاہ کیا۔مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ جونام دیے ان میں سے کسی ایک کو آئی جی بنایا جائے، آئی جی سندھ کے لیے مزید نام نہیں دیں گے۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور صوبائی وزیراطلاعات سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ سندھ سوتیلا صوبہ ہے، کسی اور صوبے کیلئے آئی جی کی تبدیلی کا معاملہ کابینہ میں نہیں جاتا، آئی جی پولیس کلیم امام کو سیاست کا شوق ہے تو ملازمت چھوڑ کر سامنے آجائیں۔ نجی ٹی وی کے مطابق کراچی کے ضلع شرقی سے ایم کیو ایم، پی ایس پی اور اے این پی کے مقامی رہنماؤں کی پیپلزپارٹی میں شمولیت کے موقع پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے سعید غنی نے کہا کہ قواعد کے تحت آئی جی اس طرح تقریر نہیں کرسکتا،ایسا لگ رہا ہے کہ آئی جی کے پیچھے کوئی ہے جو کہہ رہا ہے کہ ’’لگے رہو کلیم امام ہم تمہارے ساتھ ہیں‘‘ سندھ سوتیلا صوبہ ہے، کسی اور صوبے کیلئے آئی جی کی تبدیلی کا معاملہ کابینہ میں نہیں جاتا، اگر یہی معیار ہے تو پنجاب، کے پی کے اور اسلام آباد کے آئی جی کے تبادلے غیرقانونی ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر آئی جی کو سیاست کا شوق ہے تو نوکری چھوڑ کر سیاست میں آئیں،ایس ایس پی شکار پور کا اگر صوبے سے تبادلہ بھی ہوجائے تو آسیب کی طرح ان کا پیچھا کروں گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں